بھارت نے 25ہزار بھارتی شہریوں کو جموں و کشمیر کا ڈومیسائل دے دیا، پاکستان کی سخت مذمت

kashmir-karfio-2
EjazNews

پاکستان نے 25 ہزار بھارتی شہریوں کو مقبوضہ جموں و کشمیر کے ڈومیسائل دینے کے بھارتی حکومت کے اقدام کو یکسر مسترد کر دیا ہے۔
دفتر خارجہ کی ترجمان عائشہ فاروقی نے ایک بیان میں کہا کہ کشمیریوں نے بھی جعلی ڈومیسائل مسترد کردیئے ہیں۔ یہ ڈومیسائل غیر کشمیریوں سمیت دیگر بھارتی شہریوں کو دیئے گئے ہیںجن میں جموں و کشمیر گرانٹ آف ڈومیسائل سر ٹیفکیٹ قانون کے تحت بھارتی سرکاری حکام بھی شامل ہیں جبکہ یہ ایک غیرقانونی اقدام اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرار دادوں اور چوتھے جنیوا کنونشن سمیت عالمی قانون کی کھلم کھلاخلاف ورزی ہے۔
انہوں نے کہا کہ یہ اقدام پاکستان کے اس موقف کی تائید ہے کہ بھارت آرایس ایس اور بی جے پی کے ہندو توا ایجنڈے پرعملدرآمد اورکشمیریوں کو ان کی اپنی سرزمین پر اقلیت میں بدل کر مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی سازش کررہاہے۔
بھارتی حکومت ایسے اقدامات سے کشمیریوں کوان کے منصفانہ حق خودارادیت سے محروم کرنا چاہتی ہے جس کا وعدہ اُن سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں میں بھی کیاگیاہے۔
ترجمان نے کہاکہ فوجی کارروائیوں، ماورائے عدالت قتل اور انسانی حقوق کی مسلسل سنگین خلاف ورزیوں سمیت ظالمانہ کارروائیوں کے ذریعے بھارت مقبوضہ کشمیر پر اپناغیرقانونی تسلط جاری رکھناچاہتاہے۔
انہوں نے کہاکہ اقوام متحدہ اورعالمی برادری کو اس صورتحال کانوٹس لیتے ہوئے بھارت کومقبوضہ کشمیرمیں آبادی کے تناسب کی تبدیلی سے روکنا چاہیے اور غیرکشمیریوں کو مقبوضہ کشمیر کے جاری کئے گئے تمام غیرقانونی ڈومیسائل سرٹیفکیٹس فوری طورپرمنسوخ کئے جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں